اِس سے پہلے کہ جدائی کی خبر تم سے ملے Khalil Ur Rehman Qamar Urdu Ghazal

Spread the love
اِس سے پہلے کہ جدائی کی خبر تم سے ملے Khalil Ur Rehman Qamar Urdu Ghazal[su_note]اِس سے پہلے کہ جدائی کی خبر تم سے ملے Khalil Ur Rehman Qamar Urdu Ghazal[/su_note]
[su_note]Ashk-e-Nadan cy kaho bad ma pachtaen gay Ap gir kr meri ankhon cy kidr jaen gay Apny lafzon ko takalum cy gira ka jana Apny lehjy ki thakawat ma bikhar jaen gay Tum cy ly jaen gy hum chhen k waday apny Ab toh qasmon ki sadaqat cy b dar jaen gay Aik tera ghar tha meri had e musafat lekin Ab yeh socha hai ky hum had cy guzar jaen gay Apny afkar jala dalian gay kaghaz kaghaz Soch mar jaye gi toh hum ap bhi mar jaen gy Es cy pehly k judai ki khabar tum cy milay Hum ny socha hai k hum tum cy bichar jaen gay[/su_note]
اِس سے پہلے کہ جدائی کی خبر تم سے ملے[su_note]اشک نادان کی کہو بعد ماں پاچتاین گے آپ گر کر میری آنکھوں کی کیڈر جائیں گے   اپنے لفظوں کو تکلم کی گرا کا جانا اپنے لیحجی کی تھکاوٹ ماں بکھر جائیں گے   تم کی لی جائیں گے ہم چحین کے وعدے اپنے اب تو قسموں کی صداقت کی بی دَر جائیں گے   ایک تیرا گھر تھا میری حد مسافت لیکن اب یہ سوچا ہے کے ہم حد کی گزر جائیں گے   اپنے افکار جلا ڈالیاں گے کاغذ کاغذ سوچ مر جائے گی تو ہم آپ بھی مر جائیں گے   اس کی پہلے کے جدائی کی خبر تم کی ملے ہم نے سوچا ہے کے ہم تم کی بچھڑ جائیں گے[/su_note]