خواب پلکوں کی ہتھیلی پہ چُنے رہتے ہیں Khalil Ur Rehman Qamar Urdu Ghazal

Spread the love
shayariurdu.org is sharing خواب پلکوں کی ہتھیلی پہ چُنے رہتے ہیں Khalil Ur Rehman Qamar Urdu Ghazal with you. This is very  Khalil Ur Rehman Qamar Poetry for every lover. the best collection of خواب پلکوں کی ہتھیلی پہ چُنے رہتے ہیں Khalil Ur Rehman Qamar Urdu Ghazal..
Khalilur Rahman Azmi collection of poetry, ghazal, Nazm in Urdu, Hindi & English. Read more about Khalilur Rahman .
خواب پلکوں کی ہتھیلی پہ چُنے رہتے ہیں Gazal
خواب پلکوں کی ہتھیلی پہ چنی رہتے ہیں
کون جانے وہ کبھی نیند چرانے آئے
 
مجھ پائے اُترے میرے الہام کی بارش بن کر
مجھ کو ایک بوند سمندر ماں چھپانے آئے
 
جب میں ساونرون تو وہ گلنار کریں میرا تبسم
جب میں ہنس دوں روح وہ غنچہ سا چٹخنا چاہے
 
جب میں تنہا ہوں میرا ہاتھ پکڑ لی آ کر
جب میں چُپ ہوں تو وہ بَدَل سا بارسنا چاہے
 
میری برسوں کی اُداسی کو صلہ کچھ تو ملے
اس کی کہہ دو میرا قرض چوکانی آئے
 
وہ میرے کانپتے ہونٹوں کی سادایان سن لی
یا میرے ضبط کو یزحار کا لہجہ دے دے
 
یا مجھے طور دے ایک گہری نظر کی چھو کر
یا مجھے چوم کے تخلیق کو سانچہ دے دےمیری ترتیب اٹھا جائے خدا کی مانند
اور مٹ جاؤں تو پِھر مجھ کو بنانی آئےخواب پلکوں کی ہتھیلی پہ چنی رہتے ہیں
کون جانے وہ کبھی نیند چرانے آئے
Khawab palkon ki hatheli pe chuny rehty hain
Kon janay wo kbhi neend churany aaye
Mujh py utray mery elham ki barish ban kr
Mujh ko aik bondh samandar ma chupanay aye
Jab main sawnrun toh wo gulnar kry mera tabassum
Jab main hans dun roh wo guncha sa chatakhna chahy
Jab main tanha hun mera hath pakar ly aa kr
Jab main chup hun toh wo badal sa barsna chahy
Meri barson ki udasi ko silla kuch toh milay
Us cy keh do mera qaraz chukany aaye
Wo mery kanptay honton ki sadaian sun ly
Ya mery zabat ko ezhar ka lehja dy dy
Ya mje tor dy aik gehri nazar cy chu kr

Ya mje chum k takhleeq ko sancha dy dy

 

Meri tarteeb utha jaye khuda ki manind
Or mit jaun toh phir mujh ko bnany aye
Khawab palkon ki hatheli pe chuny rehty hain
Kon janay wo kbhi neend churany aaye