میں نے چینل بدلنے کا سوچا ہی تھا کہ صنم ماروی لگ گئی Urdu Ghazal Tehzeeb Hafi

Spread the love

میں نے چینل بدلنے کا سوچا ہی تھا کہ صنم ماروی لگ گئی Urdu Ghazal Tehzeeb Hafi

Aur phr aik din bethy bethy mujhy apni dunya buri lag gae
Jis ko abad krty huy mery maa baap ki zindagi lag gae
Sub sawalat azbar thy jo ishq k baab ma muj sy puchy gaye
Pr sfaraf pr es mehkmy ma kisi or ki nokri lag gae
Kya karun us ki ankhon k agay andhera nahi dekh skta tha main
Ap kehty rahian ky galat admi pr meri roshni lag gayi
Es cy phly k main us cy munh phyr laita usy khud khayal aa gya
Main ny channel badlny ka socha hi tha k sanam marvi lag gayi
میں نے چینل بدلنے کا سوچا ہی تھا کہ صنم ماروی لگ گئی Tehzeeb Hafi
اور پھر ایک دن بیٹھے بیٹھے مجھے اپنی دنیا بری لگ گئی
جس کو آباد کرتے ہوئے میرے ماں باپ کی زندگی لگ گئیسب سوالات ازبر تھے جو عشق کے باب ماں مجھ سے پوچی گئے
پر سفاراف پر اس میحکمی ماں کسی اور کی نوکری لگ گئیکیا کروں اس کی آنکھوں کے آگے اندھیرا نہیں دیکھ سکتا تھا میں
آپ کہتے رہیں کے غلط آدمی پر میری روشنی لگ گئی

اس کی پھلی کے میں اس کی منه پھیر لیٹا اسے خود خیال آ گیا
میں نے چینل بادلنی کا سوچا ہی تھا کے صنم ماروی لگ گئی