Aansu Shayari in urdu two lines | Aansoo Poetry

Spread the love

shayariurdu.org is sharing Aansu Shayari, Aansu Shayari in urdu two lines with you. This is very Aansoo Poetry for every lover. the best collection of Ashq Shayari, Aansu Shayari in Urdu, Aansu Shayari sad, heartbroken Aansu Shayari

Larkiyon Ke Dukh Ajab Hote Hain Sukh Us Se Ajeeb
Hans Rahi Hain Aur Kajal Bhejta Hai Sath Sath

لڑکیوں کے دکھ عجب ہوتے ہیں سکھ اس سے عجیب

ہنس رہی ہیں اور کاجل بھیگتا ہے ساتھ ساتھ

 

Bas Ye Hua k Us Ne Takalluf Se Baat Ki
Aur Hum Ne Rote Rote Dupatte Bhigo Liye

بس یہ ہوا کہ اس نے تکلف سے بات کی

اور ہم نے روتے روتے دوپٹے بھگو لئے

Aansu Shayari in urdu two lines | Aansoo Poetry

Chunti Hain Mere Ashk Raaton Ki Bhikaranen
‘Mohsin’ Luta Raha Hoon Sar-e-Aam Chandni

چنتی ہیں میرے اشک رتوں کی بھکارنیں

محسنؔ لٹا رہا ہوں سر عام چاندنی

Palat K Aagai Kheme Ki Samt Pyas Meri
Phate Hue The Sabhi Badalon K Mashkize

پلٹ کے آ گئی خیمے کی سمت پیاس مری

پھٹے ہوئے تھے سبھی بادلوں کے مشکیزے

Aansu Shayari in urdu two lines | Aansoo Poetry

Jin Ashkon Ki Phiki Lao Ko Hum Bekar Samajhte The
Un Ashkon Se Kitna Roshan Ik Tarik Makaan Hua

جن اشکوں کی پھیکی لو کو ہم بے کار سمجھتے تھے

ان اشکوں سے کتنا روشن اک تاریک مکان ہوا

Hijr Ka Taara Doob Chala Hai Dhalne Lagi Hai Raat Wasi
Katra Katra Baras Rahi Hai Ashkon Ki Barsaat Wasi

حجر کا تارا ڈوب چالا ہے ڈھلنے لگی ہے رات وصی
قطرہ قطرہ برس رہی ہے اشکوں کی برسات وصی

 

Nahi Hota Kisi Tabib Se Is Marz Ka Ilaaj Wasi
Ishq Laa Ilaaj Hai, Bas Parheez Kijiye

نہیں ھوتا کسی طبیب سے اس مرض کا علاج وصی
عـــشـــق لا عــلاج ھـــــے ، بس پــــرہــیــز کیجیے

 

Aankhon Se Mri Is Liy Lali Ni Jati
Yadon Sy Koi Raat Khali Ni jati

Aansu Shayari in urdu two lines | Aansoo Poetry

آنکھوں سے مری اس لیے لالی نہیں جاتی
یادوں سے کوی رات کھالی نہیں جاتی

Kitni Zulfain Kitne Aanchal Uray Chand Ko Kya Khabar
Kitna Matam Hua Kitne Aansu Bahe Chand Ko Kya Khabar

کتنی زلفیں کتنے آنچل اڑے چاند کو کیا خبر
کتنا ماتم ہوا کتنے آنسو بہے چاند کو کیا خبر

Samundar Mai Utarta Hun Tou Ankhen Bheeg Jaati Hain
Teri Ankhon Ko Parhta Hun Tou Ankhen Bheeg Jaati Hain

سمندر میں اترتا ہوں تو آنکھیں بھیگ جاتی ہیں
تری آنکھوں کو پڑھتا ہوں تو آنکھیں بھیگ جاتی ہیں

 

Aaj Youn Mausam Ne De Jashn-e-Mohabbat Ki Khabar

Phot Kar Rone Lage Hain, Mai Mohabbat Aur Tum

آج یوں موسم نے دی جشن محبت کی خبر
پھوٹ کر رونے لگے ہیں ، میں محبت اور تم

 

Hazaron Mausamon Ki Hukmarani Hai Mere Dil Par
“Wasi” Mai Jab Bhi Hansta Hun To Ankhen Bheeg Jaati hain

ہزاروں موسموں کی حکمرانی ہے مرے دل پر

وصیؔ میں جب بھی ہنستا ہوں تو آنکھیں بھیگ جاتی ہیں

Har Ek Muflis K Mathe Par Alam Ki Dastaanain Hain
Koi Chehra Bhi Parhta Hun To Ankhen Bheeg Jaati Hain

ہر اک مفلس کے ماتھے پر الم کی داستانیں ہیں

کوئی چہرہ بھی پڑھتا ہوں تو آنکھیں بھیگ جاتی ہیں

Tumhara Naam Likhne Ki Ijazat Chin Gai Jab Se
Koi Bhi Lafz Likhta Hun To Ankhen Bheeg Jaati Hain

تمہارا نام لکھنے کی اجازت چھن گئی جب سے

کوئی بھی لفظ لکھتا ہوں تو آنکھیں بھیگ جاتی ہیں

Mere Rone Ki Haqeeqat Jis Mai Thi
Ek Muddat Tak Wo Kaghaz Nam Raha

میرے رونے کی حقیقت جس میں تھی

ایک مدت تک وہ کاغذ نم رہا

Dil Hi To Hai Na Sang-o-Khisht Dard Se Bhar Na Aaye Kyun
Rooyenge Hum Hazar Baar Koi Humain Sataye Kyun

دل ہی تو ہے نہ سنگ و خشت درد سے بھر نہ آئے کیوں

روئیں گے ہم ہزار بار کوئی ہمیں ستائے کیوں

Inn Hathon Ki Lakeeron Mein Woh Malaal Hain,

Aa Ke Dekho, Zara Behte Huye Ashkon Ka Apna Jalal Hai

ان ہاتھوں کی لکیروں میں وہ ملال ہیں
آکے دیکھو، ذرا بہتے ہوئے اشکوں کا اپنا جلال ہے

 

Zabt Karti Hun Aansu’on Ko Toh Gham Rota Hai,

Chup Rehti Hun Toh Aankhon Mein Dard Hota Hai

ضبط کرتی ہوں آنسو ’ آن کو تو غم روتا ہے ،
چُپ رہتی ہوں تو آنكھوں میں درد ہوتا ہے

 

Dard Ke Hath Bik Gayi’en Khushiyan,
Aur Hum Baich Kar Bahut Roye

درد كے ہاتھ بک گئی ’ ان خوشیاں ،
اور ہم بیچ کر بہت روئے

 

Ustad Kyun Roya Tha Kin Halaat Ka Maara Tha,
Bachon Ko Seekhaya Jo Mohabbat Kaise Likhte Hain

استاد کیوں رویا تھا کن حالات کا مارا تھا ،
بچوں کو سییخایا جو محبت کیسے لکھتے ہیں

 

Suno Har Roz Rula Dete Ho,

Kisi Ke Dard Se Dard Nahi Hota Tumhe

سـنو ہر روز رلا دیتے ہو
کسی کے درد سے درد نہیں ہوتا تمہیں

 

Tum Ne Dekha Hai Kabhi Aankh Mein Behta Hua Khawab,

Tum Ne Samjhey Hain Kabhi Hont Pe Sahme Huye Lafz

تم نے دیکھا ہے کبھی آنکھ میں بہتا ہوا خواب
تم نے سمجھے ہیں کبھی ہونٹ پہ سہمے ہوئے لفظ

 

Hum Ne Aankhon Ko Jab Nichora Toh,

Aik Aansu Hazaar Khawab Giray

ہم نے آنکھوں کو جب نچوڑا تو
ایک آنسو ہزار خواب گرے

 

Karke Kajal Se Dosti Ek Din,

Main Bhi Utrunga Teri Aankhon Mein

کرکے کاجل سے دوستی اِک دن
میں بھی اُترونگا تیری آنکھوں میں

 

Aankh Kambakht Se Is Bazam Mein Aansu Na Ruka,

Aik Katrey Ne Daboya Mujhe Dariya Ho Kar

آنکھ کمبخت سے اس بزم میں آنسو نہ رُکا
ایک قطرے نے ڈبویا مجھے دریا ہوکر

 

Yaad Ki Kashtiyan Banayi Thi,

Apni Aankhon Mein Bhar Gaya Dariya

یاد کی کشتیاں بنائی تھی
اپنی آنکھوں میں بھر گیا دریا

 

Chand Nikla Toh Main Logon Se Lipat Lipat Kar Roya,

Gham Ke Aansu Thay Jo Khushiyon Ke Bahane Nikle

چاند نکلا تو میں لوگوں سے لپٹ لپٹ کر رویا
غم کے آنسو تھے جو خوشیوں کے بہانے نکلے

 

Shiddat e Gham Mein Mere Deeda e Tar Ne Mohsin,

Patharon Ko Bhi Kayi Baar Pighalte Dekha

شدتِ غم میں میرے دیدہِ تر نے محسن
پتھروں کو بھی کئی بار پگھلتا دیکھا

 

Bus Ab Murda Samajh Kar mujhe Roo Lo Tum,
Main Agar Ab Zinda Bhi Hoon Toh Tumhare Liye Nahi

بس اب مردہ سمجھ کر مجھے رُو لو تم ،
میں اگر اب زندہ بھی ہوں تو تمھارے لیے نہیں

 

Kabhi Sajde Kabhi Aansu Hazaron Koshishein,
Lekin Jo Haq Mein Nahi Behtar Woh Rone Se Nahi Milta

کبھی سجدے کبھی آنسو ہزاروں کوششیں ،
لیکن جو حق میں نہیں بہتر وہ رونے سے نہیں ملتا

If you like ourAansu Shayari in Urdu two lines Aansu Shayari sad, heartbroken Aansu Shayari then share it with your friends and family and also with your Sad Bestfriend also share it on Facebook.

Thanks for Reading Aansu Shayari in Urdu two lines | Aansoo Poetry