Han yeh such hai mohabbat nahi ki Tehzeeb Hafi Urdu Ghazal

Spread the love
Han yeh such hai mohabbat nahi ki ہاں یہ سچ ہے کہ محبت نہیں کی Tehzeeb Hafi Urdu Ghazal
Han yeh such hai mohabbat nahi ki
Yar bus meri tabiyat nahi ki
Es liye ga’oun ma selab aya
Hum ny daryaoun ki izzat nahi ki
Us ko dekha tha ajab halat ma
Phir kabhi us ki hifazat nahi ki
Jism tak us ny mujhy sonp diya
Dil ny es par b qana’at nahi ki
Yad b yad cy rkha us ko
Bhool janay ma b gaflat nahi ki
Han yeh such hai mohabbat nahi ki ہاں یہ سچ ہے کہ محبت نہیں کی Tehzeeb Hafi Urdu Ghazal

ہاں یہ سچ ہے محبت نہیں کی
یار بس میری طبیعت نہیں کی

اس لیے گا ’ اون ماں سیلب آیا
ہم نے دریاون کی عزت نہیں کی

اس کو دیکھا تھا عجب حالت ماں
پِھر کبھی اس کی حفاظت نہیں کی

جسم تک اس نے مجھے سونپ دیا
دِل نے اس پر بی کانا ’ ایٹ نہیں کی

یاد بی یاد کی رکھا اس کو

بھول جانے ماں بی گفلت نہیں کی

Han yeh such hai mohabbat nahi ki ہاں یہ سچ ہے کہ محبت نہیں کی Tehzeeb Hafi Urdu Ghazal