Har aik jabar cy inkari rahy gi Ali zaryoun Urdu Ghazal 2022

Spread the love

Har aik jabar cy inkari rahy gi

Mohabbat hamd hai Jari rahy gi

Yunhi nade Ali parhta rahun ga main

Meri lalkar do dhari rahy gi

Hum eaisa kehny waly jab talak hain

Ghazal bandooq par bhari rahy gi

Purana dost dushman ho raha hai

So us ki zarab toh kari rahy gi

Bhaly tum his qadar ansu baha lo

Adaqari adaqari rahy gi

Toh kya phir multavi samjhun yeh bosa

Yeh tyari bhi tyari rahy gi

Ali aik shair eaisa sun liya hai

Ka’i din tak toh sarshari rahy gi

 

ہر ایک جبر کی انکاری رہے گی

محبت حمد ہے جاری رہے گی

یونہی ناد علی پڑھتا رہوں گا میں

میری لالکار دو دھری رہے گی

ہم یایسا کہنے والے جب تلک ہیں

غزل بندوق پر بھری رہے گی

پرانا دوست دشمن ہو رہا ہے

سو اس کی ضرب تو کری رہے گی

بھلے تم ہس قدر آنسو بہا لو

اداقاری اداقاری رہے گی

تو کیا پِھر ملتوی سمجھوں یہ بوسہ

یہ تیاری بھی تیاری رہے گی

علی ایک شعر یایسا سن لیا ہے

کا ’ آئی دن تک تو سرشاری رہے گی