Musafat kabhi manzil ka ta’aiyun nahi krti Khalil Ur Rehman Qamar Urdu Ghazal

Spread the love
[su_note]Musafat kabhi manzil ka ta’aiyun nahi krti غزل Khalil Ur Rehman Qamar Urdu Ghazal[/su_note]
[su_note] مسافت کبھی منزل کا تا ’ ایون نہیں کرتی اس راہ ماں بس پاؤں کے چلے نہیں جاتے   ان تیشنہ لبوں کو ہے میری خون کی نسبت پتھر جو میری سمٹ اچھالے نہیں جاتے   اس واسطے اس شکس کی کہنا تھا کے نا جا کوئی چور کے جائے تو حوالے نہیں جاتے   دِل کی مجھے رغبت تھی میرے دوست وگرنہ ٹوٹے ہوئے شیشے تو سنبھالے نہیں جاتے   رہتے ہیں میری آنکھ ماں کچھ خواب مجسم بت ہیں جو کابے کی نیکالی نہیں جاتے[/su_note]
[su_note]Musafat kabhi manzil ka ta’aiyun nahi krti Es rah ma bs paun ky chalay nahi jaty Un tishnah labon ko hai meri khoon cy nisbat Pathar jo meri simat uchalay nahi jatay Es wastay us shakas cy kehna tha k na ja Koi chor k jaye toh hawalay nahi jaty Dil cy mje ragbat thi mery dost wagarna Tootay huy sheeshay to sambhaly nahi jaty Rehty hain meri ankh ma kuch khawab mujasim Buut hain jo kabay cy nikaly nahi jatay[/su_note]