Tera chup rehna mery zehan ma kya beth gya تہذیب حافی | Urdu Ghazal Tehzeeb Hafi

Spread the love
Tera chup rehna mery zehan ma kya beth gya تہذیب حافی | Urdu Ghazal Tehzeeb Hafi
Tera chup rehna mery zehan ma kya beth gya تہذیب حافی | Urdu Ghazal Tehzeeb Hafi
یوں نہیں کے فقط میں ہی اُسے چاہتا ہوں
جو بھی اُس پیڑ کی چھاؤں میں گیا بیٹھ گیا
اتنا میٹھا تھا وہ غصے بھرا لہجہ مت پوچھ
اُس نے جس جس کو بھی جانے کا کہا بیٹھ گیا
اپنا لڑنا بھی محبت ہے تمہیں علم نہیں
چیختی تم رہی اور میرا گلہ بیٹھ گیا
اُس کی مرضی وہ جسے پاس بیٹھا لے اپنے
اِس پہ کیا لڑنا فلاں میری جگہ بیٹھ گیا
بات دریاؤں کی سورج کی نہ تیری ہے یہاں
دو قدم جو بھی میرے ساتھ چلا بیٹھ گیا
بزمِ جاناں میں نشستیں نہیں ہوتیں مخصوص
جو بھی اک بار جہاں بیٹھ گیا بیٹھ گیا
Tera chup rehna mery zehan ma kya beth gya تہذیب حافی | Urdu Ghazal Tehzeeb Hafi
Tera chup rehna mery zehan ma kya beth gya
Itni awazian tujhy den k gala beth gya
Yun nahi ky faqat main hi usy chahta hn
Jo bhi us pairh ki chaun ma gya beth gya
Etna metha tha wo ghussy bhara lehja mat puch
Us ny jis jis ko bhi janay ka kaha beth gya
Apna larna bhi mohabbat hai tumain ilam nahi
Chekhti tum rahi aur mera gala beth gya
Us ki marzi wo jisy pas betha ly apny
Es pe kya larna falan meri jagha beth gya
Bat dayaon ki suraj ki na teri hai yahan
Do qadam jo bhi mery sath chala beth gya
Bazm-e-jana mein nashisten nahi hoten makhsos
Jo bhi aik bar jahan beth gya beth gya