Tum sarwat ko parhti ho تم ثروت کو پڑھتی ہو Ali Zaryoun Urdu Ghazal

Spread the love

Tum sarwat ko parhti ho تم ثروت کو پڑھتی ہو Ali Zaryoun Urdu Ghazal

Tum sarwat ko parhti ho
Kitni achi larki ho

Bat nahi sunti ho kyun
Ghazlen bhi toh sunti ho

Kya rishta hai shamon cy
Suraj ki kya lagti ho

Log nahi darty rab cy
Tum logon cy darti ho

Misron ma baten krna
Tum asan samjhti jo

Main to jeeta hn tum ma
Tum kyun muj pr marti ho

Adam or sudhr jaye
Tum bhi had hi krti ho

Kyun inkar karun es ka
Tum es jism ma rehti ho

Pyar hai yeh tableeg nahi
Kis chakr ma parti ho

Main janat cy nikla tha
Or tum muj cy nikli ho

Kis ny jeans kari mamnu
Pehno achi lagti ho

Kafi ho multan ki tum
Aur Zaryoun ki masti ho

 

تم ثروت کو پڑھتی ہو
کتنی اچھی لڑکی ہو

بیٹ نہیں سنتی ہو کیوں
غزلیں بھی تو سنتی ہو

کیا رشتہ ہے شمعوں کی
سورج کی کیا لگتی ہو

لوگ نہیں ڈرتے رب کی
تم لوگوں کی ڈرتی ہو

مصرعوں ماں باتیں کرنا
تم آسَن سمجھتی جو

میں تو جیتا ہوں تم ماں
تم کیوں مجھ پر مرتی ہو

آدَم اور سودحر جائے
تم بھی حد ہی کرتی ہو

کیوں انکار کروں اس کا
تم اس جسم ماں رہتی ہو

پیار ہے یہ تابلیگ نہیں
کس چاکر ماں پڑتی ہو

میں جنت کی نکلا تھا
اور تم مجھ کی نکلی ہو

کس نے جینس کری مامنو
پہنو اچھی لگتی ہو

کافی ہو ملتان کی تم
اور زاریون کی مستی ہو