Woh Humsafar Tha Urdu Poetry – Naseer Turabi Poetry

Spread the love

shayari Urdu is sharing Naseer Turabi Sad Ghazal In Urdu Woh Humsafar Tha Urdu Poetry – Naseer Turabi Poetry 2022 . In this Magical Poetry collection by Naseer Turabi, you will feel love and sadness both together.

ہمسفر تھا مگر اُس سے ہمنوائی نہ تھی
وہ ہمسفر تھا مگر اُس سے ہمنوائی نہ تھی

کہ دھوپ چھاؤں کا عالم رہا، جدائی نہ تھی

عداوتیں تھیں، تغافل تھا، رنجشیں تھیں مگر
بچھڑنے والے میں سب کچھ تھا، بےوفائی نہ تھی

بچھڑتے وقت، اُن آنکھوں میں تھی ہماری غزل
غزل بھی وہ، جو کسی کو ابھی سنائی نہ تھی

کبھی یہ حال کہ دونوں میں یک دلی تھی بہت
کبھی یہ معاملہ، جیسے کہ آشنائی نہ تھی

کسے پکار رہا تھا وہ ڈوبتا ہوا دن
صدا تو آئی تھی، لیکن کوئی دہائی نہ تھی

عجیب ہوتی ہے راہ سخن بھی دیکھ نصیر
وہاں بھی آ گئے آخر، جہاں رسائی نہ تھی
ﻧﺼﯿﺮ ﺗُﺮّﺍﺑﯽ

Woh Humsafar Tha Urdu Poetry – Naseer Turabi POetry 2022

Woh humsafar tha magar us say humnawaayi na thi
Keh dhoop chayon ka alam raha,judaai na thi

Na apna ranj na auron ka dukh,na tera malal
Shab`e firaq kabhi hum nay yun ganwayi na thi

Mohabbaton ka safar is tarha bhi guzra tha
Shikasta dil thay musaafir shikasta paayi na thi

Adawatein thin,taghaful tha,ranjishein thin magar
Bicharhnay walay main sab kuch tha,bewafaayi na thi

Bicharhtay waqt un aankhon main thi humari ghazal
Ghazal bhi woh jo kisi ko abhi sunayi na thi

Kabhi yeh haal keh donon main yakdili thi bohat
Kabhi yeh marhala jaisay keh ashnayi na thi

Ajeeb hoti hay rah`e sukhan bhi dekh naseer
Wahan bhi aa gaye akhir jahan rasayi na thi

Naseer Turabi

If you like our Woh Humsafar Tha Urdu Poetry – Naseer Turabi Poetry 2022 then share this “ Naseer Turabi Poetry 2022” with your friends and family and also with your Hafi’s Lover friend also share it on Facebook.